منگل, جولائی 27 Live
Shadow
سرخیاں
لبنان میں سیاسی بحران و معاشی بدحالی: ارب پتی کاروباری شخصیت اور سابق وزیراعظم نجیب میقاطی حکومت بنانے میں کامیاب، فرانسیسی منصوبے کے تحت ملک کو معاشی بدحالی سے نکالنے کا اعلانجنگی جہازوں کی دنیا میں جمہوری انقلاب: روس نے من چاہی خوبیوں کے مطابق جدید ترین جنگی جہاز تیار کرنے کی صلاحیت کا اعلان کر دیا، چیک میٹ نامی جہاز ماکس-2021 نمائش میں پیشکیوبا میں کورونا اور تالہ بندی کے باعث معاشی حالات کشیدہ: روس کا خوراک، ماسک اور ادویات کا بڑا عطیہ، پریشان شہریوں کے انتظامیہ اور امریکی پابندیوں کے خلاف بڑے مظاہرےچینی معاملات میں بیرونی مداخلت ایسے ہی ہے جیسے چیونٹی کی تناور درخت کو گرانے کی کوشش: چین نے سابق امریکی وزیر تجارت سمیت 6 افراد پر جوابی پابندیاں عائد کر دیںمغربی یورپ میں کورونا ویکسین کی لازمیت کے خلاف بڑے مظاہرے، پولیس کا تشدد، پیرس و لندن میدان جنگ بن گئے: مقررین نے ویکسین کو شیطانی ہتھیار قرار دے دیا – ویڈیوجرمنی: پولیس نے بچوں اور جانوروں سے جنسی زیادتی کی ویڈیو آن لائن پھیلانے والے 1600 افراد کا جال پکڑ لیا، مجرمانہ مواد کی تشہیر کیلئے بچوں کے استعمال کا بھی انکشافگوشت کا تبادلہصدر بائیڈن افغانستان سے انخلا پر میڈیا کے کڑے سوالوں کا شکار: کہا، امارات اسلامیہ افغانستان ۱ طاقت ضرور ہے لیکن ۳ لاکھ غنی افواج کو حاصل مدد کے جواب میں طالبان کچھ نہیں، تعاون جاری رکھا جائے گاامریکہ، برطانیہ اور ترکی کا مختلف وجوہات کے بہانے کابل میں 1000 سے زائد فوجی تعینات رکھنے کا عندیا: امارات اسلامیہ افغانستان کی معاہدے کی خلاف ورزی پر نتائج کی دھمکیچینی خلا بازوں کی تیانگونگ خلائی اسٹیشن سے باہر نکل کر خلا میں چہل قدمی – ویڈیو

عالمی

چینی معاملات میں بیرونی مداخلت ایسے ہی ہے جیسے چیونٹی کی تناور درخت کو گرانے کی کوشش: چین نے سابق امریکی وزیر تجارت سمیت 6 افراد پر جوابی پابندیاں عائد کر دیں

چینی معاملات میں بیرونی مداخلت ایسے ہی ہے جیسے چیونٹی کی تناور درخت کو گرانے کی کوشش: چین نے سابق امریکی وزیر تجارت سمیت 6 افراد پر جوابی پابندیاں عائد کر دیں

عالمی
چین نے امریکی رویے سے تنگ آکر جیسے کو تیسا کی پالیسی اپناتے ہوئے سابق امریکی وزیر برائے تجارت ولبر راس سمیت 6 اعلیٰ شخصیات پر پابندیاں عائد کر دی ہیں۔ پابندیاں ہانگ کانگ کے اندرونی معاملات میں مداخلت اور چینی حکام پر پابندیوں کے جواب میں لگائی گئی ہیں۔https://twitter.com/hkdc_us/status/1418616097050333189?s=20ولبر راس سابق امریکی انتظامیہ کا حصہ تھے اور چین کے خلاف تجارتی جنگ میں شدت انہی کی پالیسیوں اور افکار کی وجہ سے پیدا ہوئی۔ ولبر چین کوایشیا میں امریکی مفادات اور اثرورسوخ کے خلاف سب سے برا خطرہ سمجھتے تھے۔ انکا کہنا تھا کہ چین اصولی طور پر ایشیا میں سب سے بڑا عسکری اور معاشی خطرہ ہے۔چینی پابندی کا شکار ہونے والے دیگر افراد میں امریکہ چین اقتصادی و سکیورٹی کمیشن کے سربراہ کیرولین بارتھالومیو، سابق کانگریس کمیشن برائے چین کے سربراہ جوناتھن سٹیور، قومی ادارہ برائے جمہور...
مغربی یورپ میں کورونا ویکسین کی لازمیت کے خلاف بڑے مظاہرے، پولیس کا تشدد، پیرس و لندن میدان جنگ بن گئے: مقررین نے ویکسین کو شیطانی ہتھیار قرار دے دیا – ویڈیو

مغربی یورپ میں کورونا ویکسین کی لازمیت کے خلاف بڑے مظاہرے، پولیس کا تشدد، پیرس و لندن میدان جنگ بن گئے: مقررین نے ویکسین کو شیطانی ہتھیار قرار دے دیا – ویڈیو

عالمی
یورپ کے مخلتلف ممالک میں کورونا ویکسین کی لازمیت کے خلاف بھرپور مظاہروں کا سلسلہ جاری ہے۔ برطانیہ، فرانس اور آسٹریا اس حوالے سے پیش پیش ہیں جہاں ہزاروں کی تعداد میں مختلف شہروں میں بڑے مظاہروں کا اہتمام ہو رہا ہے۔https://twitter.com/sbattrawden/status/1418992538669699074?s=20https://twitter.com/Shayan86/status/1418921881671979014?s=20https://twitter.com/wlctv_ca/status/1419024730158297088?s=20https://twitter.com/RandiM20/status/1418974037179523082?s=20پیرس سمیت مختلف شہروں میں مظاہرین کی پولیس کے ساتھ ہاتھا پائی، پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے آنسو گیس اور مرچ سپرے کا استعمال بھی کیا۔https://twitter.com/TheMarieOakes/status/1418930435581743105?s=20https://twitter.com/AwakenedOf/status/1418964122411089921?s=20https://twitter.com/ClementL...
صدر بائیڈن افغانستان سے انخلا پر میڈیا کے کڑے سوالوں کا شکار: کہا، امارات اسلامیہ افغانستان ۱ طاقت ضرور ہے لیکن ۳ لاکھ غنی افواج کو حاصل مدد کے جواب میں طالبان کچھ نہیں، تعاون جاری رکھا جائے گا

صدر بائیڈن افغانستان سے انخلا پر میڈیا کے کڑے سوالوں کا شکار: کہا، امارات اسلامیہ افغانستان ۱ طاقت ضرور ہے لیکن ۳ لاکھ غنی افواج کو حاصل مدد کے جواب میں طالبان کچھ نہیں، تعاون جاری رکھا جائے گا

عالمی
امریکی صدر جو بائیڈن نے افغانستان سے افواج کے مکمل انخلا کے اپنے فیصلے کا دفاع کیا ہے اور اس سلسلے میں وینتام جنگ جیسی کسی صورتحال کے امکان کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ کابل میں موجود غنی انتظامیہ کو امریکہ کی مکمل حمایت حاصل ہے اور وہ امارات اسلامیہ افغانستان یعنی طالبان کو روکنے کی پوری طاقت رکھتے ہیں۔امریکی صدر اور انکی انتظامیہ کو آج کل ہتھیاروں کی لابی کے زیر اثرلبرل امریکی میڈیا کی جانب سے سخت سوالوں کا سامنا ہے۔ آج میڈیا سے گفتگو میں صدر بائیڈن نے یہ اعتراف بھی کیا کہ امارات اسلامیہ افغانستان ملک کی اہم طاقت ہے اور یہ گزشتہ 20 سال سے ہے، تاہم انہوں نے امریکی افواج کی مدد کی حامل کابل انتظامیہ کو طالبان سے زیادہ طاقتور قرار دیا ہے۔ انکا کہنا تھا کہ امارات اسلامیہ کے کابل پہ قبضے کا کوئی امکان نہیں ہے، انکے پاس صرف ۷۵۰۰۰ جنگجو ہیں اور کابل کے پاس ۳ لاکھ فوجی ہیں، جدید طیاروں ...
امریکہ، برطانیہ اور ترکی کا مختلف وجوہات کے بہانے کابل میں 1000 سے زائد فوجی تعینات رکھنے کا عندیا: امارات اسلامیہ افغانستان کی معاہدے کی خلاف ورزی پر نتائج کی دھمکی

امریکہ، برطانیہ اور ترکی کا مختلف وجوہات کے بہانے کابل میں 1000 سے زائد فوجی تعینات رکھنے کا عندیا: امارات اسلامیہ افغانستان کی معاہدے کی خلاف ورزی پر نتائج کی دھمکی

عالمی
افغان طالبان نے ملک کی اندرونی سیاست پر جاری دنیا بھر کے منفی پراپیگنڈے پر اپنے ردعمل میں کہا ہے کہ فی الحال کابل، امارات اسلامیہ افغانستان کے نشانے پر نہیں ہے۔ برطانوی نشریاتی ادارے سے گفتگو میں ترجمان امارات اسلامیہ افغانستان کا کہنا تھا کہ اگر ستمبر میں معاہدے کے مطابق تمام غیر ملکی افواج ملک سے نہ نکلیں تو انہیں قابض کے طور پر دیکھا جائے گا اور اسی کے مطابق طالبان کا ردعمل بھی ہو گا۔ بیان کی مزید وضاحت کرتے ہوئے سہیل شاہین کا کہنا تھا کہ غیر ملکی افواج میں فوجی، ٹھیکیدار اور وہ تمام عملہ شامل ہے جو حملے کا معاون ہے یا ہو سکتا ہے۔ترجمان امارات اسلامیہ افغانستان کا مزید کہنا تھا کہ معاہدے کی خلاف ورزی کو برداشت نہیں کیا جائے گا اور افغان عوام کو اس پر جوابی کارروائی کا مکمل حق ہو گا، عوام ملکی قیادت کے فیصلے کو ہی آخری مانے گی۔غیر ملکی سفارتی عملے اور غیر ملکی سرکاری تنظیموں ک...
سینکڑوں امریکی و یورپی کمپنیوں پر سائبر حملہ: ہیکروں کا ڈیٹا لوٹانے کے لیے 7 کروڑ ڈالر تاوان کا مطالبہ

سینکڑوں امریکی و یورپی کمپنیوں پر سائبر حملہ: ہیکروں کا ڈیٹا لوٹانے کے لیے 7 کروڑ ڈالر تاوان کا مطالبہ

عالمی
بیشتر آن لائن کمپنیوں پر سائبر حملہ کرنے والے مجرموں نے کمپنیوں سے 7 کروڑ ڈالر تاوان کا مطالبہ کیا ہے۔ حملہ آوروں کا کہنا ہے کہ اگر کمپنیاں اپنا ڈیٹا واپس لینا چاہتی ہیں تو انہیں رقم ادا کرنا ہو گی۔ مطالبہ خفیہ نیٹ پہ ایک تحریر کی صورت میں سامنے آیا ہے۔حملہ آور گزشتہ کچھ ماہ میں امریکہ اور یورپ کے متعدد بڑے آن لائن کاروباروں کو نشانہ بنا چکے ہیں، جن میں گوشت اور دیگر اشیا خوردونوش، فرنیچر اور کریانے کے کاروبار زیادہ نمایاں ہیں۔ سائبر حملوں کی زد میں متعدد کاروباد مکمل بند ہو گئے ہیں، جن میں سے کچھ تو ہزاروں شاخوں پر مبنی بین الابراعظمی وسیع کاروبار تھے۔امریکی صدارتی محل سے جاری ہونے والے بیان میں حملے کی تحقیقات کے ساتھ ساتھ متاثرہ کاروباروں کی معاونت کی یقین دہانی بھی کروائی گئی ہے۔ صدر جو بائیڈن نے روس پر شک کا اظہار کرتے ہوئے تحقیقاتی رپورٹ طلب کی ہے، انکا کہنا تھا کہ ماض...
موساد کے سابق سربراہ کا ایرانی جوہری سائنسدان اور مرکز پر سائبر حملے کا اعترافی اشارہ: ایرانی سائنسدانوں کو منصوبہ چھوڑنے پر معاونت کی پیشکش کر دی

موساد کے سابق سربراہ کا ایرانی جوہری سائنسدان اور مرکز پر سائبر حملے کا اعترافی اشارہ: ایرانی سائنسدانوں کو منصوبہ چھوڑنے پر معاونت کی پیشکش کر دی

عالمی
موساد کے سابق سربراہ نے ریٹائر ہونے کے بعد ایک انٹرویو میں اشارہ دیا ہے کہ ایرانی جوہری مرکز میں ہونے والے دھماکے اور ایک ایٹمی سائنسدان کے قتل کے پیچھے قابض صیہونی انتظامیہ کا ہاتھ تھا۔ یوسی کوہن نے انٹرویو میں ایران کو انتباہ بھی جاری کیا۔گذشتہ سال جولائی میں ایران کے  نطنز جوہری مرکز پر سائبر حملہ کیا گیا تھا جس کے نتیجے میں زیر زمین جوہری تنصیب میں موجود بجلی کا نظام مکمل طور پر تباہ ہو گیا تھا اور جوہری مرکز نے کام چھوڑ دیا تھا۔نومبر 2020 میں ایران کے جوہری پروگرام کو ایک اور دھچکا لگا جب اس کے ایک اعلیٰ جوہری سائنسدان محسن فخری زادے کو ایک خودکار مشین گن کے ذریعے سڑک پر شہید کردیا گیا، ایران نے ایک بار پھرموساد پر حملے کا ذمہ دار ہونے کا الزام عائد کیا تھا۔ان دونوں واقعات پر تبادلہ خیال کرتے ہوئے کوہن نے اشارہ دیا کہ انکی سربراہی میں موساد نے یہ دونوں حملے کیے۔ یاد رہے ک...
کاراباخ آزادی جنگ: جنگی قیدی چھڑوانے کے لیے آرمینی وزیراعظم کی آزربائیجان کو بیٹے کی حوالگی کی پیشکش

کاراباخ آزادی جنگ: جنگی قیدی چھڑوانے کے لیے آرمینی وزیراعظم کی آزربائیجان کو بیٹے کی حوالگی کی پیشکش

عالمی
آرمینیا کے قائم مقام وزیر اعظم نیکول پشینین نے حکومت کو ہدایت کی ہے کہ وہ جنگی قیدیوں کے تبادلے میں آذربائیجان کو ان کا بیٹا پیش کردے۔ آرمینی وزیراعظم کا بیان ملک کے شمالی گاؤں میٹس منٹاش میں اپنے حامیوں سے خطاب کے دوران سامنے آیا ہے، جو کچھ ہی دیر میں خطے مین سماجی میڈیا پر انتہائی مقبول ہو گیا۔واضح رہے کہ آذربائیجان نے گذشتہ سال جنگ کے دوران آرمینیا کے سینکڑوں فوجی جنگی قیدی بنا لیے تھے، جن کی آزادی کے لیے حکومت پر دباؤ بڑھ رہا ہے، اور جنگ ہاری قیادت قیدیوں کی رہائی کے ذریعے اپنی ساکھ بچانے کی کوشش میں ہے۔قائم مقام وزیر اعظم نے کہا کہ میں نے اپنے متعلقہ حکام کو باضابطہ طور پر آزربائیجان کی طرف یہ تجویز بھیجنے کی ہدایت کی ہے کہ وہ جنگی قیدیوں کے بدلے میرا بیٹا پیش کر دیں، آرمینیا کا یہ بی دعویٰ ہے کہ قیدیوں میں بیشتر عام شہری بھی ہیں۔اپنے بیٹے کو یرغمال بھیجنے کی تجویز اصل م...
ایرانی رویہ جوہری معاہدے کی بحالی میں تعطل کا باعث بن سکتا ہے: امریکی وزیر خارجہ بلنکن

ایرانی رویہ جوہری معاہدے کی بحالی میں تعطل کا باعث بن سکتا ہے: امریکی وزیر خارجہ بلنکن

عالمی
امریکی وزیر خارجہ اینتھونی بلنکن نے ایرانی جوہری معاہدے کی بحالی میں تعطل کے امکانات کا اظہار کیا ہے۔ امریکی قانون سازوں سے گفتگو میں وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ ایران جوہری بم کی تیاری میں وقفے کے دورانیے کو ہفتوں تک کم کرنا چاہتا ہے، لیکن دوسری طرف امریکہ پر دباؤ ڈال رہا ہے کہ امریکی معاشی پابندیاں مذاکرات میں رکاوٹ ہیں۔بلنکن کا مزید کہنا تھا کہ ایک طرف مذاکرات جاری ہیں اور دوسری طرف ایران جوہری منصوبے کو بھی جاری رکھے ہوئے ہے۔ انہوں نے کہا واضع طور پر کہا کہ یہ کہنا مشکل ہے کہ ایران معاہدے میں واپسی کی شرائط کی تعمیل کے لیے تیار ہے یا نہیں۔دراصل امریکہ اس مدت کے تعین میں مشکل کا شکار ہے کہ ایران کو جوہری ہتھیار بنانے میں کتنا وقت لگے گا، اس سلسلے میں صدر اوباما کے دور میں لگائے تخمینے اور آج کے دور میں نمایاں فرق ہے۔ 2015 میں معاہدے سے قبل ماہرین کا خیال تھا کہ ایران کو جوہری ہت...
امریکہ نے یوکرین کے نیٹو میں شمولیت کی پیشکش کے دعوے کی تردید کر دی، یوکرین کا بھی غلطی کا اعتراف، وضاحت جاری

امریکہ نے یوکرین کے نیٹو میں شمولیت کی پیشکش کے دعوے کی تردید کر دی، یوکرین کا بھی غلطی کا اعتراف، وضاحت جاری

عالمی
یوکرین کو امریکہ کی جانب سے نیٹو میں شمولیت کی پیشکش کا دعویٰ واپس لینا پڑ گیا ہے، یوکرینی عہدیداروں کے لیے معاملہ انتہائی حفت آمیز رہا جب انہیں جوش میں آکر دیے اپنے بیان کو واپس لینا پڑا۔ یہ غلط فہمی یوکرین کے صدر اور اس کے امریکی ہم منصب جو بائیڈن کے مابین ہونے والی گفتگو کے بعد پیدا ہوئی تھی۔صدر بائیڈن کے ساتھ گفتگو کے بعد یوکرینی صدر نے دعویٰ کیا تھا کہ امریکی صدر نے نیٹو کی رکنیت کے طریقہ کار اور اسکے یوکرین کے لیے فوائد پر بات چیت کی ہے۔ جس پر روس کی طرف سے نہ صرف شدید مزاحمت سامنے آئی بلکہ روس نے عملی طور پر بھی بہت سے اقدامات کیے۔تاہم واشنگٹن میں قومی سلامتی کونسل کے ترجمان نے نامہ نگاروں کو بتایا کہ یوکرینی حکام نے گفتگو کو غلط سمجھا، صدر بائیڈن نے ایسی کوئی پیشکش نہیں کی ہے۔ جس پر یوکرین کو بھی اپنے جاری کردہ بیان میں تبدیلی کرنا پڑی۔ یوکرینی حکام نے مزید وضاحت میں کہا ک...
یوگوسلاویہ جنگی جرائم مسند عدالت: بوسنیا اور دیگر لسانی گروہوں کی نسل کشی اور جنگی جرائم میں ملوث سرب جرنل کی عمرقید کی سزا پر نظرثانی کی درخواست مسترد

یوگوسلاویہ جنگی جرائم مسند عدالت: بوسنیا اور دیگر لسانی گروہوں کی نسل کشی اور جنگی جرائم میں ملوث سرب جرنل کی عمرقید کی سزا پر نظرثانی کی درخواست مسترد

عالمی
ہیگ میں اقوام متحدہ کی عدالت نے سرب جنرل ریتکو ملادچ کے خلاف عمر قید کی سزا کو برقرار رکھنے کا فیصلہ سنا دیا ہے۔ مذکورہ جنرل کو 2017 میں بوسنیا مسلمانوں کی نسل کشی کے جرم میں سزا سنائی گئی تھی۔سابق سرب فوجی کمانڈر کو بین الاقوامی فوجداری عدالت نے نسل کشی، انسانیت سوز جرائم اورجنگی قوانین کی خلاف ورزی کے جرم میں قصوروار پایا تھا۔ سابق افسر نے فوجداری عدالت کی سزا کے خلاف نظر ثانی کی درخواست دی تھی، جسے عالمی عدالت نے مسترد کردیا گیا ہے۔یوگوسلاویہ کی خونی تقسیم کے دوران ہونے والے جنگی جرائم پر مقدمے کی سماعت میں آخری بڑا نام ملادچ ہی تھا۔ اور اب یہ درخواست اس سزا کو ختم کرنے کا بھی آخری موقع تھا، لہذا اب 79 سالہ انسان دشمن سرب جنرل باقی زندگی جیل کی سلاخوں کے پیچھے گزارے گا۔سابق جنرل نے یوگوسلاویہ جنگ کے دوران سرب افواج کی سربراہی کی تھی۔ اس کو بوسنیا کے مسلمانوں، کروشیاؤں اور ...

Contact Us